05-07-2017

محکمہ صحت خیبر پختونخوا نے صوبہ بھر میں خسرہ مرض کی وبائی صورتحال اختیار کرنے پر جنوبی سمیت بارہ ہائی رسک اضلاع میں دس جولائی سے آٹھ روزہ انسداد خسرہ مہم شروع کرنے کا فیصلہ کیا ہے جس میں نو ماہ سے پانچ سال کی عمر تک کے بچوں کو خسرہ سے بچاو کے ٹیکے لگائے جائیں گے ۔

انسداد خسرہ مہم کے دوسرے مرحلے میں سات جنوبی اضلاع لکی مروت ، ڈی آئی خان ، کرک، کوہاٹ ، بنوں اور ٹانک کے علاوہ مردان ، نوشہرہ ، صوابی ، چارسدہ کے ایسے علاقوں میں کی جا رہی ہے جہاں بچوں کے حفاظتی ٹیکوں کے حوالے سے کوریج کی شرح کم ہے یا پھر ان علاقوں میں مختلف خسرہ کیسز سامنے آرہے ہیں ۔