15-03-2017

پشاور ہائی کورٹ نے سرمایہ کاری کی آڑ میں سادہ لوح افراد کو لوٹنے کے الزام میں تین سال قید اور جرمانہ کی سزا پانے والے ملزم کی سزا معطل کرکے اسے ضمانت پر رہا کرنے کے احکامات جاری کردیئے ہیں ۔

دائر درخواست میں عدالت کوبتایا گیا کہ نیب نے فاریکس انٹرنیشنل کمپنی کے مالک شعیب چیمہ کے خلاف کیس میں تحقیقات کےد وران درخواست گزار ملزم ذیشان کو گرفتار کیا اور الزام عائد کیا کہ اس نے سادہ لوح افراد سے زیادہ منافع کا لالچ دے کر کروڑوں روپے بٹورے ہیں اور احتساب عدالت نے ملزم کو تین سال قید بامشقت اور انہتر لاکھ روپے جرمانہ کی سزا سنائی ہے لہذا ان کی سزا کو کالعدم قرار دی جائے کیونکہ ریفرنس میں بیالیس گواہوں کے بیانات قلم بند ہو چکے ہیں اور کسی بھی گواہ نے درخواست گزار کے خلاف کوئی بیان نہیں دیا اس طرح درخواست گزار کو ناکردہ جرم کی سزا دی گئی ہے ۔