05-04-2017

پشاور ہائی کورٹ نے دو ہزار سولہ میں بھرتی ہونے والے اسسٹنٹ ڈسٹرکٹ ایجوکیشن آفیسرز کو میرٹ کے برعکس کم سینارٹی نمبر دینے کے خلاف دائر رٹ پر پبلک سروس کمیشن خیبر پختونخوا سے جواب طلب کر لیا ہے ۔

جسٹس وقار احمد سیٹھ اورجسٹس اعجاز انور پر مشتمل دو رکنی بنچ نے دائر رٹ پٹیشن کی سماعت کی جس میں موقف اختیار کیا گیا کہ درخواست گزار دو ہزار سولہ میں اسسٹنٹ ڈسٹرکٹ ایجوکیشن آفیسرز گریڈ سولہ میں بھرتی ہوئے لیکن خیبر پختونخوا پبلک سروس کمشن کی جانب سے  جو میرٹ  لسٹ محکمہ تعلیم کو بھجوائی گئی وہ مروجہ قوانین کے برعکس ہے اور اس میرٹ لسٹ سے درخواست گزار بہت جونیئر ہو گئے ہیں لہذا مروجہ قوانین پر عمل درآمد کو یقینی بنا کر میرٹ لسٹ کو درست کرنے کے احکامات جاری کئے جائیں۔