20-09-2017

پشاور ہائی کورٹ نے اسلامیہ کالج یونیورسٹی کے وائس چانسلر ، رجسٹرار اور ڈین فیکلٹی آف فزیکل اینڈ نیومیریکل سائنس کی تنخواہیں قرق کرنے کےاحکامات جاری کردیئے ہیں ۔

جسٹس قیصر رشید اورجسٹس ناصر محفوظ پر مشتمل دو رکنی بنچ نے داکٹر شازیہ یاسمین کی جانب سے دائر رٹ درخواست کی سماعت کی جس میں عدالت کوبتایا گیا کہ درخواست گزارہ اسلامیہ کالج یونیورسٹی میں پروفیسر تعینات ہے تاہم ڈین فیکلٹی آف فزیکل اینڈ نیومریکل سائنس کی پوسٹ پر سید عنایت علی شاہ کی تقرری کی گئی ہے جو کہ غیر قانونی ہے کیونکہ وہ بیک وقت چار شعبوں کے سربراہ ہیں جن میں میتھس ، فزکس، کمپیوٹر سائنس اور سٹیٹسٹکس شامل ہیں جبکہ وہ اسلامیہ کالج یونیورسٹی کے سلیکشن بورڈ اور سنڈیکیٹ کا ممبر بھی ہے ۔دوران سماعت عدالت کوبتایا گیا کہ دائر رٹ پر عدالت نے یونیورسٹی کے وائس چانسلر ، رجسٹرار اور ڈین فیکلٹی سے جواب طلب کیا تھا لیکن تاحال جواب داخل نہیں کیا گیا ہے جس پر عدالت نے برہمی کا اظہار کرتے ہوئے ان یونیورسٹی حکام کی تنخواہیں قرق کرنے کا حکم دیا ۔