16-05-2017

پشاور ہائی کورٹ نے اسلام آباد دھرنے کےلئے جانے والے وزیر اعلی خیبر پختونخوا اور ان کے قافلے پر لاٹھی چارج اور تشدد کے خلاف دائرر ٹ پر وزیر اعلی شہباز شریف اور اٹارنی جنرل پاکستان کو نوٹس جاری کرتے ہوئے ان سے سترہ مئی تک جواب طلب کرلیا ہے ۔

جسٹس لعل جان خٹک اورجسٹس اعجاز انور پر مشتمل پشاور ہائی کورٹ کے دو رکنی بنچ نے دائررٹ درخواست کی سماعت کی جس میں موقف اپنایا گیا کہ نومبر دو ہزار سولہ میں پاکستان تحریک انصاف نے اسلام آباد میں پرامن احتجاج کی کال دی اس دوران خیبر پختونخوا سے وزیر اعلی سمیت وزراء اور کارکنوں کے قافلے صوبے سے اسلام آباد کے لئے روانہ ہوئے تو برہان انٹرچینج پر پنجاب پولیس اور ایف سی اہلکاروں نے ان کے قافلے پر لاٹھی چارج اور شیلنگ کی جس سے ان کا وقار مجروح ہوا جبکہ ان کا یہ اقدام آئین پاکستان کے خلاف ہے ۔

فاضل عدالت نے کیس کی سماعت سترہ مئی تک ملتوی کرتے ہوئےوزیر اعلی پنجاب اور اٹارنی جنرل پاکستان کو نوٹس جاری کرکے جواب طلب کر لیا۔