28-05-2018

لاہور ہائی کورٹ کے راولپنڈی بنچ نے افغان حکام کو انگور اڈا کی چیک پوسٹ دینے کے حوالے سے دائر درخواست پر دوبارہ سماعت کا فیصلہ کرلیا ہے۔

درخواست گزار نے موقف اختیار کیا تھا کہ انگور اڈا کی چیک پوسٹ افغان حکام کے حوالے کرنا پاکستان آرمی ایکٹ 1952 کی شق 24 کی خلاف ورزی ہے جس کے مطابق کوئی بھی گیریژن، قلعہ، فضائی حدود، جگہ، چیک پوسٹ یا گارڈ کسی اور کو دینا دنیا جرائم کے زمرے میں آتا ہے۔

دائر درخواست پر سماعت کرتے ہوئے لاہور ہائی کورٹ کے جسٹس مرزا وقاص رؤف نے وزارتِ دفاع کو عدالت کی معاونت کے لیے ایک باخبر افسر تعینات کرنے کی ہدایت دیتے ہوئے کیس کی سماعت 4 جون تک ملتوی کردی۔