30-08-2017

پشاور ہائی کورٹ نے ایجنسی ایجوکیشن آفیسر خیبر ایجنسی کے خلا ف انکوائری کی سفارشات پر عمل درآمد کےلئے دائر رٹ درخواست پر ڈائریکٹر   ایجوکیشن فاٹا اور اسسٹنٹ پولیٹکل ایجنٹ جمرود خیبر ایجنسی کو نوٹس جاری کرکے جواب طلب کرلیا ہے۔

جسٹس قلندر علی خان اور جسٹس ناصر محفوظ پر مشتمل پشاور ہائی کورٹ کے دو رکنی بنچ نے درخواست گزار عبدالغفور کی جانب سے دائر رٹ درخواست کی سماعت کی جس میں عدالت کوبتایا گیا کہ ایجنسی ایجوکیشن آفیسر خیبر ایجنسی نے قوانین کے برعکس ایک سو پچاس سے زائد مرد و خواتین ٹیچرز کی بھرتی کی اور بعد میں ان بھرتیوں پر انکوائری ہوئی اور اٹھارہ جولائی دو ہزار سولہ کو انکوائری مکمل ہوئی تاہم اتناعرصہ گزرنے کے باوجود انکوائری کی سفارشات پر عمل درآمد نہیں ہوا لہذا ان سفارشات پر عمل درآمد کرایا جائے اور ذمہ دار اہلکاروں کے خلاف کاروائی عمل میں لائی جائے ۔