28-04-2017

پشاور ہائی کورٹ نے ایف بی آر کو پیسکو سے سیلز ٹیکس کی مد میں پانچ ارب روپے کی وصولی سے روکنے سے متعلق حکم امتناعی میں چوبیس مئی تک توسیع کرکے سماعت ملتوی کردی ہے ۔

پیسکو کی جانب سے دائر رٹ درخواست میں عدالت کوبتایا گیا ہے کہ ایف بی آر نے پیسکو کو ایک نوٹس جاری کیا تھا جس کے مطابق اس نے پیسکو سے اسکے تمام صارفین کا نیشنل ٹیکس نمبر این ٹی این لوڈ کرنے کا کہا تھا اور یہ بھی موقف اختیار کیا کہ بجلی بلز میں پیسکو جو سیلز ٹیکس وصول کرتی ہے وہ پیسکو ایف بی آر کا ادا کرے جو کہ پانچ ارب روپے بنتا ہے ۔

عدالت نے سیلز ٹیکس کی مد میں پانچ ارب روپے کی وصولی کے خلاف حکم امتناعی جاری کی تھی جس میں فاضل عدالت نے چوبیس مئی تک توسیع کرتے ہوئے رٹ پر سماعت اگلی پیشی تک ملتوی کردی ۔