27-09-2017

خیبر پختونخوا حکومت کی جانب سے ایڈوکیٹ جنرل کی تنخواہ ہائی کورٹ کے جج کے برابر کرنے کے اقدام کو پشاور ہائی کورٹ میں چیلنج کر دیا گیا ہے ۔ایڈوکیٹ خورشید خان کی جانب سے دائر رٹ درخواست میں  صوبائی حکومت ، سیکرٹری قانون و خزانہ اور ایڈوکیٹ جنرل خیبر پختونخوا کو فریق بناتے ہوئے موقف اپنایا گیا ہے کہ صوبائی حکومت نے ایڈوکیٹ جنرل کی ماہانہ تنخواہ پشاور ہائی کورٹ کے جج کے برابر کرنے کی منظوری دی ہے جبکہ اس کے مراعات میں بھی اضافہ کیا ہے جو کہ غیر قانونی اقدام ہے لہذا تنخواہ اور مراعات میں اضافے کا نوٹی فیکیشن کالعدم قرار دیا جائے اور دیگر لاء افسروں کی تنخواہوں میں اضافہ کیا جائے ۔