05-04-2017

پشاور ہائی کورٹ نے دوران ملازمت وفات پانے والے ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈسیشن جج ریاض خٹک کو بعد ازمرگ ترقی اور دیگر مراعات دینے کےلئے دائر رٹ پر رجسٹرار پشاور ہائی کورٹ سے جواب طلب کر لیا ہے ۔

چیف جسٹس پشاور ہائی کورٹ  جسٹس یحیی آفریدی اوجسٹس اکرام اللہ خان پر مشتمل دو رکنی بنچ نے ریاض خٹک مرحوم کی بیوہ رضیہ سلطانہ کی جانب سے دائر رٹ درخواست کی سماعت کی جس میں عدالت کوبتایا گیا کہ درخواست گزارہ کے شوہر کو ملازمت سے جبری ریٹائر کیا گیا جسے ٹربیونل نے بعد میں بحال کر دیا تھا تاہم اس دوران ان کا انتقال ہو گیا اور ان کی اگلے گریڈ میں ترقی نہ ہوسکی جو اس کا حق بنتا تھا ۔ اسی طرح اس حوالے سے اعلی عدلیہ کئی فیصلوں میں پنشن اور مراعات کےلئے حقدار ملازمین کو پروفارما پروموشن دے چکی ہے لہذا اسی اصولوں کے تحت درخواست گزار کو بھی یہ سہولت فراہم کی جائے ۔

فاضل عدالت نے دائر رٹ درخواست سماعت کے لئے منظور کرتے ہوئے رجسٹرار پشاور ہائی کورٹ سے جواب طلب کر لیا۔