07-09-2017

خیبرپختونخوابارکونسل کی کال پر پشاور سمیت صوبہ بھر میں وکلاء نے  برمامیں روہنگیا کے مسلمانوں کے قتل عام کے خلاف آج صوبہ بھرکی عدالتوں کا بائیکاٹ  کیا  اورپشاورہائی کورٹ اورماتحت عدالتوں میں وکلاء عدالتوں میں مقدمات کی پیروی کےلئے پیش  نہیں ہوئے ۔ وکلاء برادری نے  اقوام متحدہ اورعالم اسلام کو برمامیں مسلمانوں پرمظالم کانوٹس لینے کامطالبہ کیا۔ وکلاء مقررین نے برما میں روہنگیاکے مسلمانوں کے قتل عام کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے حکومت وقت سے روہنگیاکے مسلمانوں کیلئے امدادی پیکج کی فراہمی کا مطالبہ بھی  کیا۔ ان کا کہنا تھا کہ برماکی حکومت کاروہنگیاکے مسلمانوں کااپناشہری نہ مانناعالمی قوانین کی خلاف ورزی ہے اوراس بنیاد پران کاقتل عام کرنااورہجرت کے لئے مجبورکرناقابل مذمت ہے جس پر دنیاکی خاموشی قابل افسوس ہے۔ انہوں نے کہاکہ پاکستان کی وکلاء برادری اپنے روہنگیامسلمان بھائیوں کی ہرممکن سفارتی ٗ اخلاقی مدد کرے گی ۔انہوں نے حکومت سے مطالبہ کیاکہ روہنگیاکے مسلمانوں کے حقوق کے تحفظ کے لئے اقوام متحدہ سے مددلے۔