11-10-2017

پشاور ہائی کورٹ نے بم دھماکوں اور دوسرے حادثات کے وقت ہسپتالوں میں وی آئی پی موومنٹ پر پابندی لگانے کےلئے دائر درخواست صوبائی حکومت کو جواب جمع کرنے کےلئے ایک ہفتے کی مہلت دے دی ہے ۔

جسٹس وقار احمد سیٹھ اورجسٹس یونس تہیم پر مشتمل دو رکنی بنچ نے ایڈوکیٹ محمد خورشید کی جانب سے دائر رٹ درخواست کی سماعت کی جس میں عدالت کوبتایا گیا کہ پشاور میں اکثر حادثات اور بم دھماکوں کے بعد زخمیوں کو جب ہستپالوں میں لایا جاتا ہے تو اس وقت اعلی شخصیات ہسپتالوں کا رخ کرتے ہیں جس سے رش کے باعث زخمیوں کو فوری طبی امداد کی فراہمی میں رکاوٹ بن جاتی ہے لہذا اس اقدام پر پابندی عائد کی جائے ۔