01-06-2017

چیف جسٹس پاکستان جسٹس میاں ثاقب نثار نے کہا ہے کہ بنی گالہ میں ناجائز تجاوزات اور درخت کاٹنے کی شکایات کے علاوہ مزید مسائل بھی سامنے آئے ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ بنی گالہ میں غیر ضروری تعمیرات زیادہ ہوگئی ہیں، مسئلہ یہ ہے کہ انہیں گرایا جائے یا ریگولیٹ کیا جائے۔

بنی گالا میں ناجائز تجاوزات سے متعلق ازخود نوٹس کی سماعت چیف جسٹس پاکستان کی سربراہی میں سپریم کورٹ کے 3 رکنی بنچ نے کی۔

 عدالت نے کہا کہ سی ڈی اے اور اسلام آباد انتظامیہ کی رپورٹ میں کئی دیگر مسائل بھی سامنے آئے ہیں جس میں غیر قانونی تعمیرات کی ایک بڑی تعداد بھی شامل ہے، سوال یہ ہے کہ ان عمارتوں کو گرایا جائے یا ریگولیٹ کیا جائے؟

عمران خان کے وکیل نے کہا کہ عدالت کی طرف سے ازخود نوٹس لینے کے بعد بنی گالا میں غیر قانونی تعمیرات اور درختوں کی کٹائی میں فرق پڑا ہے۔

 عدالت نے از خود نوٹس کیس کی مزید سماعت جون کے تیسرے ہفتے تک ملتوی کردی۔