رجسٹرار پشاور ہائی کورٹ کی جانب سے جاری ہونے والے اعلامیہ کے مطابق تبدیل  ہونے والے سول ججوں میں سول جج جوہر اعجاز علی شاہ کو مالاکنڈ سے طور غر، ملک محمد حسنین کو چارسدہ سے ہنگو،تصور حسین کو او ایس ڈی پشاور ہائی کورٹ ، قاضی عطاء اللہ کو خیبر پختونخوا جوڈیشل اکیڈمی پشاور سے تبدیل کرکے دروش چترال ،کرن ناز کو مانسہرہ سے لکی مروت ، سید مدثر حسین شاہ ترمذی کو کوہاٹ سے ایبٹ آباد ، سید شوکت اللہ شاہ  کو ایبٹ آباد سے لوئر دیر لعل قلعہ ،  محمد جمشید کو شیرنگل اپر دیر سے اوایس ڈی پشاور ہائی کورٹ ،افضل احمد کو تیمرگرہ سے لعل قلعہ لوئر دیر ، افتاب اقبال کو تنگی چارسدہ سے ہر ی پور، شبیر محمد کو مردان سے لکی مروت شاہد محمود کو صوابی سے ہری پور، اعجاز الرحمان قاضی کو ڈی ائی خان سے پشاور ، مہ جبین کو مردان سے لکی مروت ، نصیر احمد کو کاٹلنگ مردان سے بونی چترال ، سید حسن رضا شاہ کو کرک سے بالاکوٹ مانسہرہ ، محمد آیاز کو کبل سوات سے پشاور ، محمد ظہور کو ہری پور سے ڈِی آئی خان ، شمس الہدی  کو چارسدہ سے کوہاٹ ، محمد شیر علی کو بنوں سے پشاور ، فضل ناصر شاہ کو ایبٹ آباد سے ڈی آئی خان ، حسین علی کو ثمرباغ لوئر دیر سے پشاور ، محمد مشتاق کو مٹہ سوات سے کوہاٹ ، اکبر علی کو غازی ہری پور سے تنگی چارسدہ، قراۃالعین چاند عرفان کو مردان سے کرک، شاہ فیصل کو ڈی آئی خان سے بحرین سوات ، اشتیاق احمد کو بالاکوٹ سے کاٹلنگ مردن ، کرن شوکت کو مردان سے بنوں ، نجیب الحق کو لکی مروت سے مردان ، محمد حنیف کو بحرین سوات سو چارسدہ ، آصف کمال کو لکی مروت سے مردان ، شیراز طارق  کو نوشہرہ سے کوہاٹ ، خالد انور کو کرک سے مردان ، عمر عظمت خان کو ڈی آئی خان سے ایبٹ آباد، سائرہ بانو ایبٹ آباد سے مردان ، غلام حمید کو پشاور سے ہری پور، اورنگزیب  کو لکی مروت سے صوابی ، سلیم الرحمان پشاور سے شانگلہ ، فہد احمد کو ہری پور سے بنوں ، عامر علی آفریدی کو بنوں سے مانسہرہ ، فرمان علی کو مانسہرہ سے پشاور ، صائمہ منور آفریدی کو مانسہرہ سے پشاور ، سعیدہ اختر کو سوات سے پشاور ، رائیس خان کو شانگلہ سے سوات ، طاہر خان کو لعل قلعہ لوئر دیر سے تیمرگرہ لوئر دیر، جمیل فقیر  کو بونی چترال سے چترال ، محمد عادل مثال کو چکیسر شانگلہ سے مانسہرہ ، شاہ خالد کو دروز چترال سے ایبٹ آباد، یاسر حسین کو کوہستان سے سوات، سید عباس حیدر نقوی کو طور غر سے پہاڑ پور ڈی آئی خان ، حامد سجاد کو طور غر سے ثمر باغ دیر لوئر ، محمد طیب جان کو ڈی آئی خان سے پروا ڈی آئی خان ، پیر خضر حیات کو اپنی پہلی تعیناتی پر کبل سوات اور  رفیق ظہور کو اپنی پہلی تعیناتی پر مٹہ سوات تعینات کر دیا گیا ہے ۔