05-05-2017

پشاور ہائی کورٹ کے جسٹس وقار احمد سیٹھ کی سربراہی میں قائم دو رکنی بنچ نے بورڈ آف انٹرمیڈیٹ اینڈ سیکنڈری ایجوکیشن ڈی آئی خان کےلئے اراضی خریداری میں کروڑوں روپے خورد برد کرنے کے الزام میں گرفتار  بورڈ کے سابق چیئرمین نور محمد کی درخواست ضمانت مسترد کرکے خارج کر دی ہے ۔

ادھر فاضل دو رکنی بنچ نے سیکرٹری پراونشل ہائی وے اتھارٹی کی درخواست ضمانت منظور کرتے ہوئے اس کے رہائی کے احکامات جاری کردیئے ۔ دائررٹ میں عدالت کو بتایا گیا کہ  درخواست گزار سیکرٹری پراونشل ہائی وے اتھارٹی شریف اللہ پر کروڑوں روپے کرپشن کا الزام ہے لیکن اس کے خلاف جرم ثابت نہیں ہوا ہے اور اسے نیب نے گزشتہ سال گرفتار کیا ہے اس لئے فاضل عدالت سے استدعا ہے کہ دائر ضمانت درخواست منظور کی جائے ۔