07-02-2017

 صوبہ خیبرپختونخوا کے تعلیمی اداروں میں پانچ سال سے سولہ سال تک بچوں کے لئے تعلیم لازمی قرار دینے کا بل صوبائی  اسمبلی میں پیش کر دیا گیا ہے۔

 بل کے تحت والدین بچوں کو سکول میں داخل کرانے کے پابند ہوں گے۔ بل کی خلاف ورزی کرنے پر والدین کو یومیہ سو روپے جرمانہ اور ایک ماہ قید ہو سکے گی۔ سکول نہ جانے کی صورت میں بچوں کے والدین ذمہ دار ہوں گے۔

بل کے تحت صرف معذور، ذہنی بیماری یا سکول دور ہونے کی صورت میں والدین جرمانے اور سزا سے مستثنی ہوں گے۔ اسمبلی میں اپوزیشن نے بھی لازمی پرائمری اور سکینڈری ایجوکیشن بل کو خوش آئند قرار دیا ہے۔ بل کا مقصد یہ ہے کہ تعلیمی اداروں میں بچوں کو زیادہ سے زیادہ تعداد میں داخل کرایا جا سکے۔