13-09-2017

پشاور ہائی کورٹ نے تہکال کے علاقہ میں گورنمنٹ گرلز کالج کےلئے مختص کئے گئے فنڈ کو اسلامیہ کالج منتقل کرنے کے خلاف دائر رٹ پر پرنسپل اسلامیہ کالج اور صوبائی حکومت سے جواب طلب کرلیا ہے ۔

چیف جسٹس پشاور ہائی کورٹ جسٹس یحیی آفریدی اور جسٹس اشتیاق ابراہیم پر مشتمل دو رکنی بنچ نے دائر رٹ درخواست کی سماعت کی جس میں عدالت کوبتایا گیا کہ صوبائی حکومت کی جانب سے پشاور کے علاقہ تہکال میں گرلز کالج کے تعمیر کی منظوری دی گئی تھی جس کےلئے فنڈز بھی مختص کئے گئے تھے تاہم اس فنڈ کو تہکال میں کالج بنانے کی بجائے اسلامیہ کالج منتقل کیا گیا ہے جو کہ غیر قانونی ہے کیونکہ ایک جگہ کی فنڈ کو دوسری جگہ پر منتقل نہیں کیا جاسکتا۔ دوران سماعت حکومتی وکیل نے عدالت کوبتایا کہ تہکال میں کالج کےلئے اراضی موجود نہیں ہے ۔ فاضل عدالت نے دائر رٹ پر پرنسپل اسلامیہ کالج اور صوبائی حکومت سے جواب طلب کرلیا ۔