09-05-2017

پشاور ہائی کورٹ نے بہترین کارکردگی پر دو ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن ججز ، بارہ سینئر سول ججز اور سولہ سول ججز کم جوڈیشل مجسٹریٹس کے ترقیوں کے احکامات جاری کردیئے ہیں ۔

رجسٹرار پشاور ہائی کورٹ  کی جانب سے جاری ہونے والے اعلامیہ کے مطابق چیف جسٹس پشاور ہائی کورٹ جسٹس یحیی آفریدی نے بہترین کارکردگی پر ایڈمنسٹریشن کمیٹی کی سفارشات کی روشنی میں مجموعی طور پر تیس جوڈیشل افسران کے اگلے گریڈوں میں ترقی کے احکامات جاری کر دیئے ہیں ۔

اعلامیہ کے مطابق ترقی پانے والے دو ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن ججوں بدرالدین اور فخرزمان کو ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج کے عہدے پر ترقی دے دی گئی ہے جبکہ ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج کے عہدے پر ترقی پانے والےبارہ سینئر سول ججوں میں اعجاز احمد ، ولی محمدخان ، سید کمال حسین شاہ ، عظیم اللہ مشوانی ، مس سعدیہ عندلیب ، مس نصرت نیاز ، ارباب سہیل حامد ، مسز شبانہ محسود ، مسز نادیہ سعید ، مس ودیہہ مشتاق ملک ، سعید طفیل احمد اور مس لبنی زمان شامل ہیں۔

اسی طرح اعلامیہ کے مطابق سینئر سول ججوں کے عہدوں پر ترقی پانے والے سولہ  سول ججز کم جوڈیشل مجسٹریٹس میں ملک محمد حسنین ، اعجاز الحق اعوان ، میاں زاہد اللہ جان ، عاصم ریاض ، عبدالباسط، سلطان حسین ، عادل زیب خان ، سید زاہد شاہ ، ڈاکٹر قاضی عطاء اللہ ، امین سید ، شیر عزیز ، فیصل انجم ، حناء مہوش ، راجہ محمد شعیب خان ، عالمگیر شاہ اور نثار محمد خان شامل ہیں۔

اعلامیہ کے مطابق ترقی پانے والے ان جوڈیشل افسران کے تعیناتیوں کا نوٹی فیکیشن جلد جاری کر دیا جائے گا جبکہ چھ ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن ججز  کو وکلاء سے مروجہ طریقہ کار کے تحت بھرتی کیا جائے گا اور اس ضمن میں جلد  اقدامات اٹھائے جائیں گے ۔

پشاور ہائی کورٹ کی جانب سے جاری ہونے والے پریس ریلیز کے مطابق چیف جسٹس پشاور ہائی کورٹ  جسٹس یحیی آفریدی نے یہ احکامات بھی جاری کئے ہیں کہ صوبائی پبلک سروس کمیشن سے انچاس سول ججز کم جوڈیشل مجسٹریٹس کے خالی آسامیوں کو پر کرنے کے لئے فوری طور پر رابطہ کیا جائے ۔