06-06-2018

جسٹس ریٹائرڈ دوست محمد خان نے بطور نگراں وزیر اعلی خیبر پختونخوا اپنے عہدے کا حلف اٹھالیا ہے ۔ گورنر کے پی کے اقبال ظفر جھگڑا نے ان سے عہدے کا حلف لیا۔

گورنر ہاوس میں منعقدہ حلف برداری تقریب میں  اسپیکر صوبائی اسمبلی اسد قیصر، سابق وزیر اعلی پرویز خٹک سمیت سابق  ارکان صوبائی اسمبلی  اور سینئر وکلاءنے  شرکت کی ۔

نگران وزیراعلیٰ  خیبر پختونخوا  جسٹس (ر) دوست محمد خان نے بعد میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے  کہا کہ صوبائی کابینہ مختصر لیکن میرٹ پر منتخب کی جائے گی،آئین نے جو کام دیا اسے پورا کریں گے، شفاف الیکشن کے لیے سکیورٹی کو یقینی بنائیں گے ان کا کہنا تھا کہ وقت پر الیکشن شفاف اور صحیح طریقے سے کرانے کی کوشش کریں گے۔

نگراں وزیر اعلی کا  کہنا تھا کہ کوشش ہو گی محدود دور حکومت میں عوام کو زیادہ ریلیف دیں کیونکہ سابق حکومت نے بجٹ پیش نہیں کیا اس معاملے پر قانون کے مطابق عمل کریں گے۔

واضح رہے کہ جسٹس (ر) دوست محمد خان  1953ء میں خیبر پختونخوا کے ضلع بنوں میں پیدا ہوئے، انہوں نے بنوں ہی سے گریجویشن اور پھر کراچی سے وکالت کی ڈگری حاصل کی۔

جسٹس (ر) دوست محمد خان نے بنوں میں ہی وکالت کی پریکٹس شروع کی اور بنوں بار اور پھر پشاور ہائی کورٹ بار کے صدر بنے۔وہ دو ہزار دو  میں پشاور ہائی کورٹ کے ایڈیشنل جج بنے اور 2003ء میں انہوں نے پشاور ہائی کورٹ کے مستقل جج کے طور پر حلف اٹھایا، 2011ء میں پشاور ہائی کورٹ کے چیف جسٹس تعینات کیے گئے۔

دوست محمد خان 2014ء میں سپریم کورٹ کے جج بنے،19مارچ 2018 ءکو مدت پوری کرکے ریٹائر ہو گئے۔