14-03-2017

پشاور ہائی کورٹ نے جعلی پاکستانی کمپیوٹرائزڈ شناختی کارڈ بنانے کے الزام میں مجموعی طور پر پندرہ سال قید بامشقت اور ڈیڑھ لاکھ روپے جرمانہ کی سزا پانے والے افغان پاشندے کی سزا معطل کرکے ضمانت پر رہا کرنے کے احکامات جاری کردیئے ہیں ۔

استعاثہ کے مطابق ایف آئی اے حکام نے کچھ عرصہ قبل ایک کاروائی کے دوران افغان شہری غفار کو گرفتار کرکے اس کے قبضے سے پاکستانی کمپیوٹرائزڈ شناختی کارڈ  برآمد کیا تھا جس پر ایمیگریشن کی خصوصی عدالت نے ملزم کو مختلف دفعات کے تحت مجموعی طور پر پندرہ سال قید اور ڈیڑھ لاکھ روپے جرمانہ کی سزا سنائی ۔

عدالت نے دلائل مکمل ہونے پر ملزم کی سزا معطل کرکے ضمانت پر رہا کرنے کے احکامات جاری کردیئے ۔