01-02-2017

پشاور ہائی کورٹ نے افغان مہاجرین کےلئے مختص جلالہ کیمپ کی اراضی کا گذشتہ اڑتیس سال کا کرایہ ادا نہ کرنے پر سیکرٹری سیفران ، صوبائی سیکرٹری داخلہ اور ڈپٹی کمشنر مردان کو نوٹس جاری کرکے جواب طلب کرلیاہے۔

چیف جسٹس پشاور ہائی کورٹ جسٹس یحیی آفریدی اور جسٹس اکرام اللہ خان پر مشتمل دو رکنی بنچ نے مالک اراضی محمد یوسف کی جانب سے دائر رٹ پٹیشن کی سماعت کی جس میں عدالت کو بتایاگیا کہ درخواست گزار کی اراضی جلالہ افغان کیمپ کےلئے انیس سو اناسی میں اس وقت کی حکومت نے ان سے لی تھی اور اراضی کا پانچ ہزار روپے فی کنال کے حساب سے کرایہ طے کیا گیا تھا تاہم اتنا عرصہ گزرنے کے باوجود کرایہ ادا نہیں کیا گیا جبکہ صوبائی اور وفاقی حکومتیں اقوام متحدہ سے باقاعدہ طور پر کرایہ حاصل کرتی رہیں تاہم درخواست گزار کو کرایہ ادا نہیں کیا گیا لہذا فاضل عدالت سے استدعا ہے کہ رٹ پٹیشن منظور کرکے حکومت کو اراضی کا کرایہ ادا کرنے کے احکامات جاری کئے جائیں ۔

عدالت نے ابتدائی دلائل کے بعد وزارت سیفران اور صوبائی حکومت کو نوٹس جاری کرکے جواب طلب کر لیا۔