24-01-2017

پشاور ہائی کورٹ نے ہیڈ کانسٹیبل سپیشل برانچ کی پنشن کے حوالے سے واضح احکامات کے باوجود جواب جمع نہ کروانے پر ڈی پی او چارسدہ کی تنخواہ قرق کرنے کے احکامات جاری کردیئے ہیں۔

جسٹس وقار احمد سیٹھ اورجسٹس محمد غضنفر خان پر مشتمل دو رکنی بنچ نے درخواست گزار عظمت علی کی جانب سے دائر درخواست کی سماعت کی جس میں عدالت کو بتایا گیا کہ درخواست گزار انیس سو اٹھاسی سے بطور کانسٹیبل محکمہ پولیس بھرتی ہوا تاہم بعد میں اس کا اسپیشل برانچ میں تبادلہ کر دیا گیا اور درخواست گزارکی  ستائیس سالہ سروس ہے تاہم اس کی پنشن ادا نہیں کی جارہی ہے ۔ دوران سماعت عدالت کو بتایا گیا کہ فاضل عدالت نے متعلقہ حکام سے اس ضمن میں متعدد بار جواب بھی طلب کیا ہے تاہم تاحال جواب موصول نہیں ہو ا ہے ۔

اس پر عدالت نے برہمی کا اظہار کرتے ہوئے ڈی پی او چارسدہ کی تنخواہ قرق کرنے کا حکم دیا ۔