29-05-2017

چیف جسٹس پشاور ہائی کورٹ جسٹس یحیی آفریدی نے صوبے کے مختلف اضلاع میں جوڈیشل افسران کے تبادلوں اور تعیناتیوں کے احکامات جاری کردیئے ہیں ۔

رجسٹرار پشاور ہائی کورٹ کی جانب سے جاری ہونے والے نوٹی فیکیشن کے مطابق تبدیل ہونے والے گیارہ جوڈیشل افسران میں دو ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن ججز ، چار ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن ججز جبکہ  پانچ سول ججز کم جوڈیشل مجسٹریٹس شامل ہیں ۔

جاری نوٹی فیکیشن کے مطابق پشاو رہائی کورٹ اور دیگر ججز نے عوامی مفاد میں گیارہ جوڈیشل افسران کے تبادلوں اور تعیناتیوں کے احکامات جاری کئے ہیں ان میں ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج /جج احتساب عدالت پشاور محمد عاصم امام کو تبدیل کرکے جج کنزومر کورٹ صوابی تعینات کر دیا گیا ہے جبکہ ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج / جج اے ٹی سی ڈی آئی خان انعام اللہ خان کو تبدیل کرکے ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج ڈی آئی خان تعینات کیا گیا ہے ۔ نوٹی فیکیشن کے مطابق ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج ایبٹ آباد کلثوم اعظم کو تبدیل کرکے ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج مانسہرہ ، ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج مانسہرہ انعام اللہ وزیر کو ایبٹ آباد  جبکہ ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج بنوں طفیل احمد کو صوابی اور ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج صوابی ہاجرہ رحمان کو تبدیل کرکے ڈائریکٹر ایسٹرکشن ٹو خیبر پختونخوا جوڈیشل اکیڈمی پشاور تعینات کر دیا گیا ہے۔

اسی طرح واجد علی سول جج جوڈیشل مجسٹریٹ شبقدر چارسدہ  کوبنوں ، عطاء اللہ جان کو بنوں سے شبقدر چارسدہ ، طلحہ محمد کو صوابی سے پشاور ، محمد ہارون کو پشاور سے تحت بھائی مردان جبکہ جج فیملی کورٹ  سوات عطیہ رفیق کو تبدیل کرکے سول جج کم جوڈیشل مجسٹریٹ صوابی تعینات کر دیا گیا ہے ۔