28-02-2017

سپریم کورٹ نے وزارت مذہبی امور کو حج و عمرہ کے منظورشدہ ٹور آپریٹرز کی تفصیلات ویب سائٹ پر آویزاں کرنے اور ضلعی حکام و تحقیقاتی اداروں کو ارسال کرنے کے احکامات جاری کردیئے ہیں۔ عدالت نے وزارت مذہبی امور کو ہدایت کی کہ وہ اپنی ویب سائٹ کو اردو،انگلش اور تمام علاقائی زبانوں میں اپ ڈیٹ کرے ، 2 ماہ کے اندر اندر عدالتی حکم پر عملدرآمد کیلئے اقدامات کئے جائیں ، آئندہ حج آپریشن سے 3 ماہ قبل تشہیری مہم بھی شروع کی جائے جبکہ ذمہ داریوں میں غفلت برتنے والوں کیخلاف کارروائی کی جائیگی ۔ جسٹس دوست محمد خان  کی سربراہی میں قائم بینچ نے جعلی ٹریول ایجنسی بنا کر فراڈ کرنیوالے قاری امیر احمد شاہ و دیگر ملزموں کی درخواست ضمانت مسترد کرتے ہوئے فیصلہ میں قرار دیا کہ حج کے نام پر سادہ لوح افراد کو لوٹنا معمول بن چکا ہے جبکہ اداروں کی خاموشی نے متاثرین کے زخموں پر نمک پاشی کی ۔ ہر سال حج سیزن شروع ہونے سے قبل لوگوں کو اس قسم کی جعلی ٹریول ایجنسیاں لوٹتی ہیں ۔ عدالتوں کو اس طرح کے کیسز کو مختلف انداز سے لینا چا ہیئے اور اس فراڈ کو روکنا چا ہیئے ، چنانچہ عدالت سمجھتی ہے کہ ملزموں کو ضمانت پر رہا نہیں کر نا چاہیئے لہٰذا پٹیشن مسترد کی جاتی ہے۔