24-08-2017

خیبر پختونخوا میں تیزی سے بڑھنے والے “ڈینگی وائرس “پر قابو پانے کے لیے 17 انٹامالوجسٹ یعنی کیڑوں کا مطالعہ کرنے والے سائنسدان تعینات کرنے کا فیصلہ کرلیا گیا۔

صوبائی حکومت نے صوبے کے تمام ہسپتالوں میں ڈینگی ہیلپ ڈیسک قائم کرنے، لوگوں کو ڈینگی سے متعلق معلومات فراہم کرنے کے لیے 24 گھنٹے ہیلپ لائن قائم کرنے اور ڈینگی رسپانس یونٹ کو مزید فعال بنانے کا فیصلہ کیا گیا۔

حکومت نے “انصاف خدمت گار” کے نام سے ضلعی نمائندوں کے ذریعے تمام اضلاع میں صفائی مہم بھی شروع کرنے کا فیصلہ کیا گیا جبکہ نومبر سے مارچ کے دوران خصوصی اور بڑے پیمانے پر جراثیم کش مہم چلائی جائے گی اور تمام محکموں کو ان مہمات کے دوران ان کی ذمہ داریوں کے متعلق آگاہ کیا جائے گا تاکہ مربوط طریقے سے مہمات چلائی جا سکیں۔