26-05-2017

 پشاو رہائی کورٹ نے صوبائی حکومت سے اب تک صحت انصاف پروگرام کے تحت بیرون و اندرون ملک سے ملنے والی امداد مریضوں کی سہولت پر خرچ کرنے کی تفصیلات طلب کر لی ہے ۔

چیف جسٹس پشاور ہائی کورٹ جسٹس یحیی آفریدی اورجسٹس اعجاز انور پر مشتمل دو رکنی بنچ نے پشاور ہائی کورٹ بار ایسوسی ایشن کی جانب سے دائررٹ پٹیشن کی سماعت کی جس میں عدالت کوبتایا گیا کہ صوبائی حکومت نے ہسپتالوں میں صحت انصاف پروگرام کے تحت بیرونی ممالک سے امداد لی لیکن صورتحال یہ ہے کہ ہسپتالوں میں مریضوں کو صحت کی کوئی سہولت میسر نہیں ۔