26-04-2018

پشاور ہائیکورٹ نے محکمہ ٹرانسپورٹ میں کنٹریکٹ بنیاد پر کام کرنے والے دو افراد کو ریگولر نہ کرنے کیخلاف دائر درخواست پر سیکرٹری ٹرانسپورٹ اور ڈائریکٹر ٹرانسپورٹ سے جواب طلب کر لیا ہے۔

عدالت عالیہ کے جسٹس وقار احمد سیٹھ اور جسٹس محمد ایوب خان پر مشتمل دو رکنی بنچ نے کمپیوٹرآپریٹر زاکر اللہ اور جونیئر کلرک سوار خان کی جانب سے دائر درخواست پر سماعت کی۔ عدالت کو بتایا گیا کہ دونوں افراد دو ہزار تیرہ کو محکمہ ٹرانسپورٹ میں کنٹریکٹ بنیاد پر بھرتی ہوئے۔دو ہزار سترہ میں صوبائی حکومت نے ایک ایکٹ پاس کیا جس میں کمپیوٹر آپریٹر کیلئے بی اے تعلیم لازمی قرار دی جبکہ جونیئر کلرک کا عہدہ ایکٹ میں شامل ہی نہیں۔ دونوں نے کئی سالوں تک محکمہ میں گزارے ہیں۔ اسلیئے ان کو مستقل کیا جائے۔عدالت نے ان دونوں کو ملازمت سے فارغ کرنے کے خلاف دائر درخواست پر حکم امتناعی جاری کرتے ہوئے مذکورہ حکام سے جواب طلب کرلیا۔