April 26, 2019

Khyber Pakhtunkhwa Judicial Academy, Peshawar
BROADCAST TIMING

Morning : 08:00AM to 11:00AM | Evening : 03:00PM to 07:00PM
Call Now: 091-9211654 | Email us: info@radiomeezan.pk

دو نجی اسکولوں سے توہین آمیززبان استعمال کرنے پرتحریری جواب طلب

11-02-2019

سپریم کورٹ نے دو نجی اسکولوں سے توہین آمیززبان استعمال کرنے پرتحریری جواب طلب کرلیا ہے۔

جسٹس گلزار احمد کی سربراہی میں پرائیویٹ سکول فیس کیس کی سماعت ہوئی۔

سماعت کے دوران جسٹس اعجازالاحسن نے ریمارکس دیئے کہ نجی اسکولوں نے عدالتی فیصلے پرچیف جسٹس کو خط لکھا، جس میں تضحیک آمیززبان استعمال کی گئی۔

وکیل نجی اسکول نے کہا کہ عدالت کی تضحیک کا کوئی ارادہ نہیں تھا، عدالتی فیصلے پرعمل کرکے فیس کم کردی ہے۔ جسٹس گلزار احمد نے ریمارکس دیئے کہ عدالتی فیصلے کے بعد کس قسم کی باتیں کی گئیں، اسکول انڈسٹری ہے یا پیسہ بنانے کا شعبہ ، نجی اسکولوں نے تعلیم کو کاروبار بنا دیا ہے، اسکولوں نے گھروں میں زہرگھول دیا ہے، حکومت کونجی اسکول تحویل میں لینے کا حکم دے دیتے ہیں۔

عدالت نے اسلام آباد کے دونجی اسکولوں سے توہین آمیززبان استعمال کرنے پرتحریری جواب طلب کرتے ہوئے  کیس کی سماعت 2 ہفتوں تک ملتوی کردی۔

Related posts