02-06-2017

پشاور ہائی کور ٹ نے دوہزار چھ میں رجسٹرڈ ہونے والی حج کمپنی کو تاحال حج کوٹہ نہ دینے پر وفاقی حکومت اور  وزارت حج و مذہبی امور کو نوٹس جاری کرکے جواب طلب کر لیا ہے ۔

چیف جسٹس پشاور ہائی کورٹ جسٹس یحیی آفریدی اور جسٹس اعجاز انور پر مشتمل د ورکنی بنچ نے دائر رٹ درخواست کی سماعت کی جس میں موقف اپنایا گیا کہ درخواست گزار کی نجی حج و عمرہ کمپنی ہے جو درخواست گزار وزارت مذہبی امور کے ساتھ دو ہزار چھ میں رجسٹرڈ کرچکے ہیں اور گیارہ سال گزرنےکے باوجود انہیں حج کوٹہ جاری نہیں کیا جا رہا ہے جو کہ غیر قانونی اقدام ہے لہذا فاضل عدالت سے استدعا ہے کہ درخواست گزار کی نجی حج کمپنی کو حج کوٹہ جاری کرنے کے احکامات جاری کئے جائیں ۔