30-06-2017

پشاور ہائی کور ٹ نے پی سی پشاور کے دو ہزار نو کے بم دھماکے میں شہید ہونے والے محکمہ تعلیم کے اہلکار کے اہل خانہ کو شہید پیکج ادا کرنے کے احکامات جاری کردیئے ہیں۔

جسٹس قیصر رشید اورجسٹس ارشد علی پر مشتمل دو رکنی بنچ نے جاں بجق اہلکار کی بیوہ کی جانب سے دائر رٹ پٹیشن کی سماعت کی جس میں عدالت کوبتایا گیا کہ درخواست گزارہ کا شوہر بشیر زادہ انیس نومبر دو ہزار نو کو پرل کنٹینٹل ہوٹل پشاور بم دھماکہ میں جاں بحق ہوا جو چارسدہ میں محکمہ تعلیم میں درجہ چہارم ملازم تعینات تھا لیکن آٹھ سال گزرنے کے باوجود انہیں کوئی پیکج نہیں دیا گیا جس کے باعث شہید لواحقین دربدر کی ٹھوکریں کھا رہے ہیں لہذا انہیں شہید پیکج دینے کے احکامات جاری کئے حائَیں ۔

فاضل عدالت نے دلائل مکمل ہونے پر درخواست گزارہ کو دو ہزار نو کی پالیسی کے تحت شہید پیکج دینے کا حکم دیا ۔