06-11-2017

چیف جسٹس پاکستان جسٹس میاں ثاقب نثار نے فاٹا کے رکن قومی اسمبلی کے خلاف نااہلی کیس میں ریمارکس دیتے ہوئے کہا ہے کہ آرٹیکل 62 ون ایف کے تحت نااہلی کیلئے معقول وجہ ہونی چاہئے،معقول وجہ کے بغیر کسی کونااہل قرارنہیں دے سکتے۔
چیف جسٹس میاں ثاقب نثار کی سربراہی میں سپریم کورٹ کے 3 رکنی بنچ نے این اے 46 فاٹا سے رکن قومی اسمبلی کی کامیابی کے خلاف دائر اپیل کی سماعت کی جس میں مخالف امیدوارحمید اللہ جان نے موقف اختیار کیا ہے کہ رکن قومی اسمبلی ناصر خان نے کاغذات نامزدگی میں اثاثے چھپائے ہیں جس پر انہیں نااہل قراردیا جائے۔
عدالت نے  دلائل مکمل ہونے پر این اے 46فاٹاسے  رکن قومی اسمبلی  ناصرخان کی کامیابی کے خلاف اپیل خارج کر دی۔