12-09-2017

پشاورہائی کورٹ نے زرعی یونیورسٹی پشاور کے گریڈ بائیس کے چھ پروفیسرز سے ٹی ٹی ایس کی رقم واپس لینے کے اقدام کو روک دیا ہے۔

جسٹس اکرام اللہ اور جسٹس اعجاز انور پر مشتمل دو رکنی بنچ نے دائر رٹ درخواست کی سماعت کی جس میں عدالت کوبتایا گیا کہ درخواست گزار سمیت چھ دیگر میری ٹوریس پروفیسرز ٹی ٹی ایس کے عہدے پر تعینات رہے اور ان کو گریڈ بائیس میں ترقی دی گئی تو زرعی یونیورسٹی انتظامیہ نے ان سے گزشتہ تنخواہوں کی کٹوتی کی ہدایت کی ہے جو کہ غیر قانونی اقدام ہے لہذا اس فیصلہ کو کالعدم قرار دیا جائے ۔

عدالت نے ابتدائی سماعت کے بعد رٹ درخواست سماعت کےلئے منظور کرتے ہوئے ان پروفیسرز سے تنخواہوں کی کٹوتی روک دی ۔