01-08-2017

اسلام آباد کی ایک عدالت نے سابق آڈیٹر جنرل پاکستان بلند اختر رانا کو دہری شہریت اور ایک سے زائد پاسپورٹ رکھنے کے مقدمے میں ایک سال قید کی سزا سنا دی ہے ۔ملزم کو سزا سنائے جانے کے بعد اسے احاطہ عدالت سے گرفتار کرکے اڈیالہ جیل منتقل کر دیا گیا ۔

سینئر سول جج اسلام آباد غربی نے سابق آڈیٹر جنرل پاکستان کے خلاف کیس کی سماعت کی ۔

استعاثہ کے مطابق ملزم بلند اختر رانا  کینیڈا کی شہریت رکھتے تھے اور اس نے سرکاری پاسپورٹ حاصل کرتے ہوئے اپنی دہری شہریت کو چھپایا جبکہ ان پر یہ الزام بھی تھا کہ اس نے پانچ پاکستانی پاسپورٹ حاصل کئے ہوئے تھے ۔

واضح رہے کہ بلند اختر رانا کو اگست دو ہزار گیارہ میں سابق صدر آصف علی زرداری نے آڈیٹر جنرل پاکستان مقرر کیا تھا تاہم موجودہ صدر مملکت ممنون حسین نے اسے مالی بے ضابطگیوں کے الزام میں عہدے سے ہٹا دیا تھا۔