23-06-2017

اسلام آباد ہائی کورٹ نے سابق پرنسپل انفارمیشن آفیسر راو تحسین کو نیوز لیکس انکوائری کمیشن کی رپورٹ فراہم کرنے کے لئے دائر درخواست پر وفاق ، سیکرٹری اطلاعاتا ، سیکرٹری داخلہ اور وزیر اعظم کے پرنسپل سیکرٹری کو نوٹس جاری کرکے جواب جولائی کے پہلے ہفتے تک طلب کر لیاہے ۔

جسٹس عامر فاوروق نے دائر رٹ درخواست کی سماعت کی جس میں موقف اپنایا گیا کہ جس میٹنگ کی خبر لیک ہوئی اس میں درخواست گزار راو تحسین موجود ہی نہیں تھے اور خبر لیک کا تمام ملبہ درخواست گزار پر بلاجواز طور پر ڈالا گیا اور اس کے خلاف کاروائی کی گئی  جبکہ انکوائری رپورٹ  بھی درخواست گزار کو فراہم نہیں کیا جا رہا ہے تاکہ وہ الزامات کا دفاع کر سکے اور یہ ان کا حق بنتا ہے ۔