08-08-2017

خیبر پختونخوا سروس ٹربیونل نے پیٹی بند پولیس اہلکار سے چھ ہزار روپے چوری کرنے پر ملازمت سے برطرف ہونے والے ایلیٹ فورس مردان کے اہلکار کی برطرفی کالعدم قرار دیتے ہوئے ملازمت پر بحال کردیا تاہم اہلکار کے تین سالانہ انکریمنٹس روک دینے کے احکامات جاری کردیئے ہیں۔

سروس ٹربیونل نے کانسٹیبل تحسین اللہ کی جانب سے دائر اپیل کی سماعت کی جس میں ٹربیونل کو بتایا گیا کہ درخواست گزار پر اپنے ساتھی ایلیٹ فورس کے اہلکار سے چھ ہزار روپے چوری کرنے کا الزام تھا اور محکمانہ کاروائی کے دوران جرم ثابت ہونے پر اسے ملازمت سے برطرف کر دیا گیا ہے لہذا فاضل ٹربیونل سے استدعا کی جاتی ہے کہ اسے ملازمت پر بحال کیا جائے ۔

ٹربیونل نے دائر اپیل پر دلائل مکمل ہونے پر فیصلہ سناتے ہوئے ایلیٹ فورس مردان کے اہلکار کو ملازمت پر بحال کرنے جبکہ اس کے تین سالانہ انکریمنٹس روک دینے کے احکامات جاری کردیئے ۔