27-07-2017

پشاور ہائی کورٹ نے حکومت کو سزائے موت کے لیے پھانسی سے کم تکلیف دہ سزا متعارف کرانے کے احکامات جاری کرنے کے لئے دائر رٹ درخواست پر اسلامی نظریاتی کونسل اور اٹارنی جنرل آف پاکستان سے مؤقف طلب کرلیا ہے۔

 جسٹس لعل جان خٹک اور جسٹس عبدالشکور پر مشتمل دو رکنی بنچ  نے سزائے موت کے قیدی جان بہادر کی پھانسی پر حکم امتناع کی معیاد میں بھی توسیع کر دی ۔

دائر رٹ پٹیشن میں ہری پور مرکزی جیل میں موجود قیدی نے  پشاور ہائی کورٹ سے درخواست کی تھی کہ سزائے موت کے طریقے پھانسی کو غیراسلامی اور غیر آئینی قرار دیا جائے کیونکہ یہ تکلیف دہ اور انسانی اقدار کے خلاف ہے۔