22-03-2017

اسلام آباد ہائی کورٹ نے تحقیقات کیلئے مشترکہ ٹیم بنانے کا حکم دے دیاہے ۔

 جسٹس شوکت صدیقی پر مشتمل اسلام آباد ہائی کورٹ  بنچ نےسوشل میڈیا پر گستاخانہ مواد سے متعلق کیس کی سماعت کی ۔

جسٹس شوکت صدیقی  ریمارکس دیئے کہ فیس بک نبیؐ کی شان میں گستاخی نہیں روکتی تو بند کر دیں ۔ سیکرٹری داخلہ نے عدالت کو بتایا کہ ایک مشتبہ شخص کو گرفتار کرلیا گیا ہے ، کیس بہت حساس ہے ، محتاط طریقے سے تفتیش کر رہے ہیں ۔ جسٹس شوکت صدیقی نے ریمارکس دئیے کہ اگر حساس معاملہ ہے تو کیا ہاتھ نہیں ڈالیں گے ؟ پولیس اور ایف آئی اے سمیت ہر ادارہ گیند دوسرے کی طرف پھینک رہا ہے ۔

عدالت نے  حکم دیا کہ  وزارت داخلہ ، اطلاعات اور پی ٹی اے 27 مارچ تک تازہ رپورٹس جمع کرائیں ، آئندہ سماعت پر فیصلہ کریں گے کہ سوشل میڈیا چلنا چاہیئے یا نہیں ۔