10-02-2017

پشاور ہائی کورٹ نے سپریم کورٹ کے احکامات کے باوجود سول ججز کے امتحان میں ناکام امیدوار کے پرچے کی دوبارہ چیکنگ نہ کرنے پر چیئرمین پبلک سروس کمیشن خیبر پختونخوا سے جواب طلب کر لیاہے۔

جسٹس روح الاآمین خان اورجسٹس لعل جان خٹک پر مشتمل دو رکنی بنچ نے دائر رٹ درخواست کی سماعت کی جس میں عدالت کو بتایا گیا کہ درخواست گزار نے سول ججوں کے امتحان میں حصہ لیا تاہم سول لاء پرچہ دوم میں ان کے نمبر کم آئے جس پر انہیں فیل قرار دیا گیا اس پر درخواست گزار نے پشاور ہائی کورٹ میں ری چیکنگ کےلئے درخواست دائر کی جو خارج ہوئی اور سپریم کور ٹ میں دائر اپیل پر درخواست گزار کو اپنا پرچہ ملاحظہ کرنے کی اجازت دی گئی اور جب اس نے اپنا پرچہ دیکھا تو اس میں ایک سوال کو سرے سے چیک ہی نہیں کیا گیا تھا جس کے باعث اس کے نمبر کم آئے اور پبلک سروس کمیشن کے چیئرمین نے درخواست گزار کی ری چیکنگ کی درخواست مسترد کر دی ہے جو کہ ان کے ساتھ زیادتی کے مترادف ہے ۔عدالت نے ابتدائی سماعت کے بعد چیئرمین پبلک سروس کمیشن کو نوٹس جاری کرکے جواب طلب کر لیا۔