19-06-2017

جسٹس آصف سعید کھوسہ کا کہنا ہے کہ مقدمے فیصلوں کے لیے لگتے ہیں کیس ملتوی کرنے کا رواج ختم ہونا چاہیئے ۔

 سپریم کورٹ میں ملزم کی ضمانت سے متعلق کیس کی سماعت جسٹس آصف سعید کھوسہ کی سربراہی میں بنچ نے کی ۔ فاضل عدالت نے  فوجداری مقدمے میں التوا مانگنے پر برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ سپریم کورٹ میں کیس فیصلے کے لیے لگتے ہیں ، دنیا کی کسی سپریم کورٹ میں کیس ملتوی نہیں ہوتے ، کوئی وکیل ایسا سوچ بھی نہیں سکتا ، کیس ملتوی کرنے کا رواج ختم ہوچکا ہے ، دنیا بھرمیں اگر کوئی وکیل کیس ملتوی کرواناچاہے تو درخواست دیتا ہے۔