05-04-2017

سپریم کورٹ نے سات روز میں مجوزہ حج پالیسی دو ہزار سترہ کا مسودہ طلب کر لیا ہے ۔

جسٹس مشیر عالم کی سربراہی میں سپریم کورٹ کے تین رکنی بنچ نے نئے حج ٹورآپریٹرز کی رجسٹریشن سے متعلق کیس کی سماعت کی ۔ دوران سماعت عدالت نے استفسار کیا کہ اب تک حج پالیسی کو حتمی شکل کیوں نہیں دی گئی جس پر ڈپٹی اٹارنی جنرل نے عدالت کوبتایا کہ حج پالیسی کی سمری وزیر اعظم کے پاس بھیجی جا چکی ہے جس پر عدالت نے کہا کہ پاکستان میں سب کچھ وزیر اعظم ہی کرتا ہے کیا حکومت کچھ نہیں کرتی ، حج پالیسی کو چھپایا کیوں جا رہا ہے ، حکومت جان بوجھ کر پالیسی آخری لمحات میں فائنل کرے گی ، دنیا میں حج کا جھگڑا صرف پاکستان میں ہوتا ہے ۔ عدالت نے ریمارکس دیئے کہ جب تک پالیسی ہمارے سامنے نہ ہو ہم کوئی فیصلہ نہیں کر سکتے اگر وزیر اعظم حج پالیسی  کی منظوری نہیں دیتے تو آئندہ سماعت میں اس کا مسودہ رجسٹرار سپریم کورٹ  کے پاس جمع کروائیں ۔

ان ہدایات کے ساتھ ہی فاضل عدالت نے کیس کی سماعت ساتھ روز تک ملتوی کردی ۔