02-03-2017

سپریم کورٹ نے دہشت گردی مقدمہ کے ایک ملزم کی ضمانت منظور کرتے ہوئے فیصلے میں ماتحت عدالتوں کو ہدایت کی ہے کہ دہشت گرد سرگرمیوں کے مقدمات کے ملزمان کی ضمانت درخواستوں پر فیصلوں کے وقت زیادہ احتیاط برتی جائے ۔

جسٹس مشیر عالم اور جسٹس دو ست محمد خان پر مشتمل سپریم کورٹ کے دورکنی بنچ نے اپنے فیصلے میں کہا کہ ضمانت کی سطح پر مقدمہ میں شہریوں کی آزادی سے متعلق فیصلے کرتے وقت  بہت زیادہ احتیاط کی ضرورت ہے تاکہ ریاست کی رٹ چیلنج کرنے والے اصل دہشت گرد اور عسکریت پسند باہر نہ آسکیں اور معصوم شہری جیل میں نہ سٹرتے رہیں ۔

چھ صفحات پر مشتمل فیصلے میں فاضل عدالت نے کہا کہ پولیس کے ایس پی ، ایس ایس پی یا اس سے اوپر سطح کے افسروں کا فرض ہے کہ ایسے مقدمات میں سچ عدالت کے سامنے لانے کےلئے تحقیقات پر نظر رکھیں ۔