26-04-2018

چیف جسٹس میاں ثاقب نثار نے کہا ہے کہ سیاسی بنیادوں پر معاف کیے گئے قرضے واپس کروائیں گے۔

سپریم کورٹ میں قرض معافی کیس کی سماعت چیف جسٹس پاکستان کی سربراہی میں بنچ نے کی۔ درخواست گزار نے کہا کہ نواز شریف، بے نظیر بھٹو، جونیجو، یوسف رضا گیلانی اور  چوہدری برادران نے بھی قرضے معاف کروائے۔  چیف جسٹس نے کہا کہ 54 ارب روپے کے قرضے معاف کروائے گئے۔ پرانے دبے ہوئے مقدمات کو نکلوا رہا ہوں، سیاسی بنیادوں پر بھی قرضے معاف کئے گئے، کسی جگہ فریقین نے سمجھوتہ بھی کر لیا ہوگا، کمیشن کی رپورٹ آنے پر مقدمے کی کارروائی نہیں ہوئی۔

چیف جسٹس پاکستان نے کہا کہ سیاسی بنیادوں پر معاف قرضے واپس نکلوائیں گے، اگر قرضے واپس نہیں کیے تو مقروضوں کے صنعتی یونٹس ضبط کرلیں گے، رقم نہیں تو اثاثہ ریکور کرلیں گے، ایک ہفتے میں قرض معافی کی سمری بناکردیں، 2007 سے یہ معاملہ زیرالتواء ہے۔