23-08-2017

ملک میں جادو ٹونے کی روک تھام، کالے جادو، جعلی پیروں اور عاملوں پر پابندی کیلئے جادوگری کی ممانعت کا بل 2017ء پیش کر دیا گیا ہے۔ چیئرمین سینیٹ نے تحریک اور بل کو مزید غوروخوض کیلئے متعلقہ کمیٹیوں کو بھجوا دیا۔

بل کے مطابق ملک بھر میں جادو ٹونے کی روک تھام، کالے جادو پر پابندی اور جعلی پیروں وعاملوں کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی۔ بل میں کالا جادو کرنے والے شخص کو کم از کم دو سال اور زیادہ سے زیادہ سات سال تک سزا اور پچاس ہزار روپے سے دو لاکھ روپے تک جرمانہ کرنے کی تجویز دی گئی ہے۔ بل میں جادو ٹونے سے متعلق اشیا رکھنے پر تین ماہ قید اور 25 ہزار روپے جرمانہ تجویز کیا گیا ہے جبکہ قرآن پاک جیسی مقدس کتاب کا جادو ٹونے کیلئے استعمال پر عمر قید کی سزا تجویز کی گئی ہے۔بل میں تدفین کے بعد قبر کھولنے پر پابندی ہو گی جبکہ اس جرم کا ارتکاب کرنے والے کیلئے سات سال قید اور ایک لاکھ روپے جرمانہ اور مردے کا گوشت کھانے پر 14 سال قید تجویز کی گئی ہے۔