31-01-2017
پشاور کی احتساب عدالت کے جج محمدعاصم امام نے شبقدر میں ماربل فیکٹریوں کو غیر قانونی بجلی سپلائی کرکے علاقے میں لوڈ شیڈنگ کرنے کی آڑ میں ماہانہ کروڑوں روپے قومی خزانے کو نقصان پہنچانے میں مبینہ طور پر ملوث ایکسین محمد جاوید ، ایکسین اورنگزیب ، ایس ڈی او رشید احمد قریشی ، ٹریژر مشتاق ، اسسٹنٹ لائن مین فرید گل ، مطیع اللہ ، امیر حمزہ اور فرہاد کو عدم ثبوت کی بناء پر بری کردیا ۔
ملزمان پر الزام تھا کہ انہوں نے اختیارات سے ناجائز فائدہ اٹھا کر شبقدر میں واقع ماربل فیکٹریوں کے مالکان کے ساتھ ملی بھگت کرکے چوری کے ذریعے فیکٹریوں کو بجلی سپلائی کرتےوقت علاقے میں لوڈ شیڈنگ کرتے رہے جس سے نہ صرف علاقہ مکینوں کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑا بلکہ قومی خزانے کو کروڑوں روپے کا نقصان بھی ہوا ہے ۔
عدالت نے ریفرنس کی سماعت مکمل ہونے پر عدم ثبوت کے بناء پر ساتوں ملزمان کو بری کرنے کے احکامات جاری کردیئے ۔