19-04-2018

صاف پانی فراہمی کیس میں چیف جسٹس پاکستان ثاقب نثار نے وزیراعلیٰ خیبر پختونخوا پرویز خٹک کو عدالت میں طلب کرلیا ہے۔

چیف جسٹس پاکستان ثاقب نثار کی سربراہی میں سپریم کورٹ کے 3 رکنی بنچ نے پشاور رجسٹری میں صاف پانی کی فراہمی، اسپتالوں میں فضلہ تلف کرنے اور اسپتالوں کی حالت زار سمیت مختلف کیسز کی سماعت کی، اس دوران چیف جسٹس کے طلب کرنے پر چیف سیکرٹری اور سیکرٹری ہیلتھ عدالت میں پیش ہوئے،  چیف جسٹس نے سیکرٹری ہیلتھ  اور ایڈیشنل سیکرٹری ہیلتھ  کو شام 6 بجے تک تمام تفصیلات جمع کرانے کا حکم دیا۔

صاف پانی فراہمی کیس کی سماعت کے دوران وزیراعلیٰ خیبر پختونخوا پرویز خٹک کو طلب کرتے ہوئے چیف جسٹس نے استفسار کیا کہ پشاور کا گند آپ کس نہر میں ڈال رہے ہیں، آپ تو کہتے ہیں یہاں سب اچھا ہے، گڈ گورننس اور کیا ہوتی ہے، وزیراعلیٰ آج آتے ہیں یا کل، وہ جب چاہیں عدالت آجائیں میں رات 2 بجے تک یہاں موجود ہوں۔

چیف جسٹس نے استفسار کیا کہ بتایا جائے موجودہ حکومت نے کتنے نئے اسپتال بنائے اور کیا نئی سہولیات دی گئی ہیں، بتایا جائے کارڈیالوجی کا کوئی نیا اسپتال بنایا گیا ہے۔