17-08-2017

سندھ ہائی کورٹ نے صحافی ولی خان بابر کے قتل کیس میں سزائے موت پانے والے مجرم فیصل موٹا کی سزائے موت معطل کر دی ہے اور انسداد دہشت گردی کی عدالت کو حکم جاری کیا ہے کہ مقدمے کی دوبارہ سماعت کی جائے۔

سندھ ہائی کورٹ کے لاڑکانہ بینچ نے انسداد دہشت گردی کی عدالت کے فیصلے کے خلاف  مجرم فیصل موٹا کی اپیل کو منظور کرتے ہوئے یہ فیصلہ سنایا۔

دائر اپیل میں موقف اختیار کیا گیا  کہ ولی خان بابر قتل کیس میں عدالت نے انہیں غیر موجودگی میں سزا سنائی ہے جو قانون کے مطابق نہیں ہے کیونکہ اس کو دفاع کا موقع فراہم نہیں کیا گیا ۔

یاد رہے کہ 13 جنوری 2011 کو نجی نیوز چینل کے  رپورٹر ولی خان بابر کو کراچی کے علاقے لیاقت آباد میں اس وقت نشانہ بنایا گیا تھا جب وہ دفتر سے گھر جا رہے تھے۔ انسداد دہشت گردی کی عدالت نے 2014 میں فیصل موٹا اور دیگر  کو سزائے موت سنائی تھی۔