07-04-2017

پاکستان سمیت دنیا بھر میں آج صحت کا عالمی دن منایا جارہا ہے۔ بین الاقوامی ادارہ صحت نے اس سال کا موضوع ’ڈپریشن‘ رکھا ہے۔ عالمی ادارہ صحت کی جانب سے اس دن کو منانے کا مقصد لوگوں کو صحت کے اصولوں سے آگاہ کرنا ہے۔

ادارہ صحت کے مطابق ہرسال دنیا بھر میں تیس کروڑ افراد ذہنی دباؤ کا شکار ہوتے ہیں،بروقت تشخیص کےبعد علاج با آسانی ممکن ہے۔ماہرین کے مطابق ڈپریشن ایک دماغی بیماری ہے ۔ اگر انسان ذہنی طورپر صحت مند نہ ہو تو اس کے اثرات پورے جسم پر مرتب ہوتے ہیں کیونکہ دماغ ہی انسان کے سارے جسمانی نظام کو کنٹرول کرتا ہے۔ دماغی کمزوری یا بیماری کے سبب ہی بہت سے اعصابی، نفسیاتی اور جسمانی بیماریاں جنم لیتی ہیں۔ محکمہ صحت خیبر پختونخوا کے اعدادوشمار کے مطابق پاکستان میں ہرسال چار میں سے ایک شخص کسی نہ کسی حد تک ذہنی طور پر تناؤ کا شکار ہو رہا ہے۔صحت کے عالمی دن کے حوالے سے ماہرین صحت کا کہنا ہے کہ ڈپریشن میں اضافے کا سبب بدامنی، بے روزگاری اور مہنگائی بھی ہوسکتے ہیں۔ ڈپریشن سے نجات کے لیے ان مسائل کا حل ناگزیر ہے۔