02-02-2017

 پشاور ہائی کورٹ نے قرار دیا ہے کہ پشاور ڈویلپمنٹ اتھارٹی،  صوبائی محتسب  کو جوابدہ ہے تاہم صوبائی محتسب پی ڈی اے  سے دستاویزات کی طلبی کےلئے قانونی طریقہ کار اختیار کرے ۔

 یہ احکامات چیف جسٹس پشاور ہائی کورٹ جسٹس یحیی آفریدی اورجسٹس اکرام اللہ خان پر مشتمل دو رکنی بنچ نے ڈائریکٹر جنرل پی ڈی اے سلیم وٹو  کی جانب سے دائر رٹ پٹیشن کی سماعت کرتے ہوئے دیئے ۔ دائر رٹ میں موقف اختیار کیا گیا کہ صوبائی محتسب نے پی ڈی اے سے ریکارڈ طلب کیا اور درخواست گزار  کو صوبائی محتسب کے روبرو پیش ہونے کے احکامات جاری کئے تاہم پی ڈی اے ایک خود مختار ادارہ ہے  اور صوبائی محتسب کو اس بات کا اختیار نہیں کہ وہ کسی خود مختار ادارے کو نوٹس جاری کرکے طلب کرے ۔اسی طرح  صوبائی محتسب نے پی ڈی اے سے باب پشاور فلائی اوور  کا ریکارڈ بھی طلب کیا جو کہ پی ڈی اے کا منصوبہ نہیں تھا اور یہ صوبائی حکومت نے تیار کیا ہے ۔

فاضل بنچ نے دونوں جانب سے دلائل مکمل ہونے پر رٹ نمٹاتے ہوئے قرار دیا کہ صوبائی محتسب کو یہ اختیار حاصل ہے کہ وہ پی ڈی اے سے جواب طلب  کرے اور صوبائی محتسب کا یہ نوٹس توہین عدالت کے زمرے میں نہیں آتا۔