08-05-2017

پشاور ہائی کورٹ بار ایسوسی ایشن نے مردان بار ایسوسی ایشن کے مطالبات کی حمایت کرتے ہوئے آج پشاور سمیت صوبہ بھر میں عدالتی امور کا بائیکاٹ کیا اور خیبر پختونخوا حکومت سے مطالبہ کیا کہ مردان جیل کی اراضی پر فل الفور جوڈیشل کمپلیکس کی تعمیر کی جائے بصورت دیگر راست اقدام اٹھانے پر مجبور ہوں گے ۔

پشاور ہائی کورٹ بار ایسوسی ایشن کے مطابق صوبائی حکومت نے مردان جیل کی پرانی عمارت کی جگہ پر جوڈیشل کمپلیکس تعمیر کرنے کا وعدہ کیا تھا کیونکہ مردان بار کے وکلاء کو جگہ کی گنجائش کی کمی کے باعث شدید مشکلات درپیش ہیں اور مردان جیل کی نئی عمارت میں منتقلی کے باوجود صوبائی حکومت مردان جوڈیشل کمپلیکس کی تعمیر کا وعدہ ایفا نہیں کر رہی ۔

پشاور ہائی کورٹ بار ایسوسی ایشن کی کال پر  مردان بار ایسوسی ایشن کے مطالبات کی حمایت کرتے ہوئے پشاور ہائی کورٹ ، ڈسٹرکٹ پشاور بار سمیت صوبہ کے تمام بار ایسوسی ایشز نے عدالتی امور کا بائیکاٹ کیااور وکلاء عدالتوں میں مقدمات کی پیروی کے لئے پیش نہیں ہوئے جس کے باعث ہزاروں مقدمات کی سماعت نہ ہو سکی اور انہیں اگلی تاریخوں تک ملتوی کر دیا گیا ۔