01-03-2017

پشاور ہائی کورٹ نے سپریم کورٹ کے فیصلے کے باوجود صوبہ خیبر پختونخوا میں لاء یونیورسٹی قائم نہ کرنے کے خلاف دائر رٹ پر صوبائی حکومت کو نوٹس جاری کرکے جواب طلب کر لیا ہے ۔

چیف جسٹس پشاور ہائی کورٹ جسٹس یحیی آفریدی اورجسٹس اکرام اللہ خان پر مشتمل دو رکنی بنچ نے دائر رٹ درخواست کی سماعت کی جس میں عدالت کو بتایا گیا کہ دو ہزار بارہ میں پشاور ہائی کورٹ نے لاء یونیورستی کے قیام کا فیصلہ دیا تھا جسے صوبائی حکومت نے سپریم کورٹ میں چیلنج کیا تاہم سپریم کورٹ نے واضح کیا تھا کہ ہائی کورٹ  صوبائی حکومت کو لاء یونیورستی کے قیام کے احکامات نہیں دے سکتی صرف سفارشات دے سکتی ہے لیکن بعد میں سپریم کورٹ نے صوبے میں لاء یونیورسٹی قائم کرنے کے احکامات جاری کئے مگر  تاحال یونیورسٹی قائم نہیں کی گئی ۔اس لئے فاضل عدالت سے استدعا ہے کہ صوبائی حکومت کو صوبہ میں لاء یونیورسٹی کے قیام کے احکامات جاری کرے ۔